16 خرداد 1399
  -  
2020 ژوئن 5
  -  
13 شوال 1440
 
راحت حسین، سید، بھیک پوری،
• راحت حسین، سید، بھیک پوری، •
۱۳۰۶ھ/۱۸۸۸ء
 ۱۳۷۷ھ/۱۹۵۸ء
ابوالخلیل مولوی سید راحت حسین صاحب بھیک پوری  ( ابن مولوی سید محمد ابراہیم متوفی صفر ۱۳۰۹ھ)یکم محرم الحرام ۱۳۰۶ھ (=۷/ستمبر ۱۸۸۸ء)کو وطن مالوف علی نگر بھیک پور (ضلع سارن) میں پیدا ہوئے ۔ تین سال کے تھے کہ سایہ پدری سے محروم ہوگئے ۔ ابتدائی تعلیم کے بعد آپ نے اپنے خالو مولانا سید محمد مہدی صاحب لواعج الاحزان کی سرپرستی میں مظفرپور میں عربی و فارسی پڑھی ۔ پھر مدرسہ سلیمانیہ (پٹنہ)میں مولاناحافظ سید فرمان علی ساحب سے کسب فیض کیا اور ۱۳۲۲ھ میں سلطان المدارس( لکھنؤ)پہونچے ۔ اور ۱۳۳۴ھ میں فارغ التحصیل ہوئے۔ آل انڈیا شیعہ گزٹ کے مدیر مقرر ہوئے ۔ عراق و ایران کی زیارتوں سے مشرف ہوئے ۔ رام پور میں مولانا مقبول احمد صاحب کی سرپرستی میں مولوی فاضل کا کورس پورا کیا ۔
۱۳۳۶ھ میں اخبار اثناعشری کے مدیر ہوئے ۔ ۱۳۴۰ھ میں وطن واپس آئے اس کے کچھ عرصہ بعد گجرات کاٹھیاواڑ چلے گئے جہاں امام  جمعہ و جماعت کی حیثیت سے خدمات آخر عمر تک انجام دیتے رہے ۔ اوائل جون ۱۹۵۸ء میں گجرات سے وطن واپس آرہے تھے کانپور اسٹیشن پر پانی پینے کے لئے اترے غالبا لو لگ گئی اور وہیں اسٹیشن پر انتقال فرمایا ۔ ریلوے کے ذمہ داروں نے مسلمانان کانپور کو خبر کی جنہوں نے اپنے طور سے تجہیز و تکفین کرکے دفن کردیا ۔ تاریخ وفات ۵/جون ۱۹۵۸ء مطابق۱۶/ذیقعدہ ۱۳۷۷ھ روز پنجشنبہ ہے جیسا کہ آپ کے صاحبزادے مولانا سید خلیل عباس صاحب نے تحریر کیا ہے ۔ 
مضامین نگاری کا ذوق و شوق تھا ۔ مجلسیں پڑھنے کا انداز بہت دلچسپ تھا ۔